بلاول بھٹو کا وفاقی کابینہ کے تین وزراء پر کالعدم تنظیموں سے رابطے کا الزام

کراچی (اے ٹی ایم نیوز آن لائن) چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری نے ایک بار پھر وفاقی کابینہ کے تین وزراء پر کالعدم تنظمیوں سے رابطے کا الزام لگا دیا۔

پاکستان پیپلز پارٹی کے چئیرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ الیکشن میں بدترین دھندلی کے باجود حکومت ہم سے سندھ نہیں چھین سکی۔ اب سندھ کی جمہوریت کے خلاف سازش کی جارہی ہے۔

بلاول بھٹو زرداری نے کراچی میں شجرکاری مہم کا افتتاح کرتے ہوئے کہا کہ حکومت کو اب انسان بننا چاہیے۔ ہم نے ہمیشہ سندھ میں ہونے والی غیر جمہوری سازشوں کو ناکام بنایا ہے۔

انہوں نے کہا کہ اگر ناانصافی ہورہی ہے تو ہونے دو ہم اس کا مقابلہ کرسکتے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ حکومت کو کام کرنا چایئے۔ اس وقت سندھ میں سازشیں ہورہی ہیں لیکن ہم اس کا مقابلہ کریں گے۔

بلاول بھٹو زرداری نے پودا لگا کر سرسبزسندھ مہم کا افتتاح کیا اورشہید بینظیربھٹو پارک کلفٹن میں پودا لگایا۔ اس موقع پر وزیراعلی سندھ، صوبائی وزیربلدیات اور صدرپی پی پی سندھ بھی ہمراہ تھے۔

بلاول بھٹو زرداری نے مزید کہا کہ ایک وزیر کی سوشل میڈیا پر ویڈیو بہت وائرل ہوئی، وہ وزیر ایک کالعدم تنظیم سے کہتا ہے جب تک ہماری حکومت ہے آپکے خلاف کارروائی نہیں کریں گے، اس قسم کے لوگوں کو نئے پاکستان کی کابینہ میں نہیں ہونا چاہیے۔

انہوں نے کہا کہ کالعدم تنظیموں کے خلاف کارروائی اپوزیشن کا مطالبہ ہے، ہمیں حکومت کی نیت پر شک ہے، حکومت کو ہوش کے ناخن لینے چاہئیں اور غیرسنجیدہ و غیرذمے دار وزراء کو ہٹا دینا چاہیے۔

چیئرمین پی پی کا کہنا تھا کہ حکومت کو پہلے انسان پھر حکمران بننا چاہیے، حکومت غریبوں کو مدد دینے کے بجائے معاشی قتل کررہی ہے۔

یاد رہے، کچھ عرصہ قبل وفاقی وزیرِ مملکت برائے داخلہ شہریار آفریدی کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی تھی جس میں وہ کالعدم تنظیم کے لوگوں کے ساتھ پات چیت کر رہے تھے اور ساتھ ہی انکو اس بات کی یقین دہانی بھی کروا رہے تھے کہ پی ٹی آئی کی حکومت کے ہوتے ہوئے کوئی بھی انکا کچھ نہیں بگاڑ سکتا.

Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے