گورمے بیکرز آپ کو کیا کھلاتی رہی؟ چیف جسٹس نے گورمے کے خلاف کریک ڈاﺅن کا حکم دے دیا

لاہور(اے ٹی ایم نیوز آن لائن) معروف بیکری اور بیوریجز کمپنی گورمے کے کئی مینوفیکچرنگ یونٹس اور بیکریاں سیِل کردی گئی ہیں۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب فوڈ اتھارٹی کی جانب سے گورمے آئس کریم فلیورز کو مضر صحت قرار دیے جانے کے بعد گورمے نیوز چینل کی جانب سے ڈی جی پنجاب فوڈ اتھارٹی کی کردار کشی شروع کردی گئی، جس کے بعد آج کیپٹن(ر) عثمان سپریم کورٹ میں پیش ہوئے.

ڈی جی پنجاب فوڈ اتھارٹی کیپٹن(ر)محمد عثمان نے کہا ہے کہ پنجاب فوڈ اتھارٹی نے کارروائی کرتے ہوئے لاہور، فیصل آباد، سیالکوٹ اور ملتان میں گورمے فوڈز کے 5 پروڈکشن یونٹس ناقص انتظامات پر سیل کردیا ہے۔اس کے علاوہ گورمے فائیو سٹارز فوڈز بیوریجز سیکشن کو حلال لوگو کے استعمال اورسرٹیفکیٹ کی عدم موجودگی پر سیل کیا گیا.

اس کے علاوہ پنجاب بھر میں مختلف پوائنٹس کو سیل کیا گیا۔ گورمے بیکرز استعمال شدہ تیل کے بائیو ڈیزل میں عدم استعمال اور ٹوٹے فریزرز استعمال کرتے تھے.گورمے پروڈکشن یونٹ 5 میں نسوار کی موجودگی اور کچن ایریا میں حشرات کی بہتات ہونے کے باعث اسے بند کیا گیا۔

گورمے پلانٹس اور بیکرز پر انتہائی ناقص اور گندے طریقے سے اشیاءکی تیاری کی جاتی تھی،جس کے باعث اس کے متعدد پوائنٹس کو سیل کیا گیا۔ اس سے قبل فوڈ اتھارٹی نے گورمے آئس کریم کے بھی کئی فلیورز بند کروا چکی ہے۔

گورمے فوڈز کے ناقص انتظامات کا بھانڈہ پھوٹنے کے بعد گورمے گروپ کے ٹی وی چینل گورمے نیوز نیٹ ورک (جی این این) کی جانب سے ڈی جی فوڈ اتھارٹی کی کردار کشی شروع کردی گئی، جس کے بعد ڈی جی پنجاب فوڈ اتھارٹی نے آج سپریم کورٹ میں پیش ہو کر استدعا کی کہ ان کے خلاف جومہم چلائی جا رہی ہے اس کو بند کیا جائے۔ جس کے بعد چیف جسٹس نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ ”گورمے نیوز اپنے پرائم ٹائم میں کیپٹن(ر)عثمان سے معافی مانگیں“۔ اس کے ساتھ ہی فوڈ اتھارٹی کو حکم دیا کہ گورمے کے تمام پوائنٹس کا معائنہ کیا جائے۔

Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے